Home / اہم خبریں / سنا مکی نہیں بلکہ املتاس اور قسطِ شیریں، حکمت نے سنا مکی کی دلیل کو قبول کرنے سے انکار کردیا

سنا مکی نہیں بلکہ املتاس اور قسطِ شیریں، حکمت نے سنا مکی کی دلیل کو قبول کرنے سے انکار کردیا

دنیا کے متعدد ممالک اس وقت کورونا وائرس کی لپیٹ میں ہیں اور اس وبا کا مقابلہ کر رہے ہیں۔ سائنسدان و ماہرین کورونا کی ویکسین کے لئے سر جوڑ کوششوں میں مصروف ہیں لیکن اس حوالے سے واضح طور پر نہیں کہا جا سکتا کہ ممکنہ ویکسین کب یا کتنے عرصے بعد تیار ہو جائے گی۔

کورونا جیسی وبائی امراض سے بچاؤ کے لئے چند احتیاطی تدابیر پر عمل کرنے کی ہدایات پیش کی گئی ہیں جن میں سماجی دوری، 6 فٹ کا فاصلہ، بنا ضرورت گھر سے باہر نہ نکلنا اور مسلسل صابن سے دھونے جیسی حفاظتی تدابیر کی تجویز پیش کی گئیں۔

دوسری جانب کورونا وائرس کے علاج کے طور پر سوشل میڈیا پر عوام کی جانب سے دیسی ٹوٹکے آزمانے کے مشوروں میں بھی کمی نہیں اور آج کل ان مشوروں میں سرفہرست سنا مکی کے قہوے کا استعمال بتایا جارہا ہے۔

لیکن کیا واقعی سنا مکی سے کورونا وائرس کا علاج ممکن ہے؟

اس حوالے سے حکیم رضا الہیٰ سے ہماری ویب کی جانب سے سوالات کئے گئے جس میں انہوں سنا مکی کی اصلیت سے آگاہ کیا اور بتایا کہ سنا مکی نقصان دہ ہے یا فائدہ مند۔

حکیم رضا الہیٰ سے پہلا سوال کیا گیا کہ کورونا کو حکمت کیسے دیکھتی ہے؟
ان کا کہنا تھا کہ کورونا وائرس فلو کی ایک بگڑی ہوئی شکل ہے ۔ کورونا کی علامات فلو سے شروع ہوکر بخار اور نمونیا پر ختم ہوتی ہیں۔ اس میں یہ گلے کا خراب ہونا، چھینکوں کا آنا، نظام تنفس کا بگاڑ پیدا ہونا اس کے بعد پھیپڑوں میں سکڑاؤ پیدا ہونا شامل ہے- 

جڑی بوٹی سنا مکی کے استعمال کی افادیت اور نقصانات کے بارے میں بات کرتے ہوئے حکیم رضا الہیٰ کا کہنا ہے کہ لوگ سوچے سمجھے بغیر سوشل میڈیا پر ٹوٹکا شئیر کر رہے ہیں کہ سنا مکی سے کورونا وائرس کا علاج کیا جا سکتا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ بہت سے سوشل میڈیا خود ساختہ دانشور اپنے نسخے بنا کر سوشل میڈیا پر ڈال رہے ہیں اور کہتے ہیں کہ کورونا اس سے ختم ہوجائے گا، لیکن ایسا کچھ بھی نہیں ہے۔

حکیم رضا الہیٰ نے کہا کہ قسط شیریں ایک ایسی جڑی بوٹی ہے جس سے کورونا وائرس کے علاج میں مدد ممکن ہے۔ انہوں نے کہا کہ سنا مکی سے گلے اور پھیپھڑوں کے علاج کے حوالے سے کسی حدیث کی کتاب میں موجود نہیں ہے۔

ان سے دوسرا سوال کیا گیا کہ اگر سنا کمی نہیں تو کیا کھائیں جو سانس بحال کردے؟
انہوں نے کہا کہ قسطِ شیریں گلے کے امراض، پھیپھڑوں اور بخار کے لئے بہت مفید ہے اور یہی تینوں کیفیات کورونا میں پائی جاتی ہیں۔ 

حکیم رضا الہیٰ نے قسطِ شیریں سے متعلق بتایا کہ اس میں وہ تمام افادیت موجود ہیں جو کورونا وائرس میں استعمال کرائی جا سکتی ہیں۔ 

حکیم رضا الہیٰ نے قسطِ شیریں کے علاوہ مزید علاج کے طریقے بھی بتائے ہیں، یہ طریقے انٹرویو کی اس ویڈیو میں جانیں۔

Courtesy: Hamariweb

50% LikesVS
50% Dislikes
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

About khuramakram

khuramakram

یہ بھی چیک کریں

عمر سے دس سال چھوٹے نظر آئیں صرف ایک ہفتے میں

آپ شاید نہیں جانتے کہ 3 آسان اور قدرتی اجزاﺀ استعمال کرتے ہوئے ایک ایسا …

Leave a Reply